مکتبہ احمدیہ مسلمہ ۔ معہ فہرست مضامین

  1. عیسائیوں سے 20 سوالات
  2. مرد کے نکاح ثانی کی ممانعت یسوع نے کہاں کی ؟
  3. حقیقی پوتی یا نواسی سے ممانعت اناجیل میں کہاں ہے ؟
  4. یوحنا کیا ایلیا تھا یا نہیں ۔ یوحنا نے انکار کیا اور یسوع نے دعویٰ و اقرار کیا ؟
  5. کرنتھیوں باب 11 فقرہ 13 میں جھوٹے حواریوں کا ذکر ہے ۔ سچی انجیلوں یا خطوں کو پہچاننے کا معیار کیا ہے ؟
  6. انجیل متی باب 4 آیت 8 میں لکھا ہے کہ شیطان نے یسوع کو ساری سلطنتیں دکھائی ۔ کیا شیطان میں یہ طاقت ہے ؟
  7. مرقس باب 1 فقرہ 4 میں لکھا ہے کہ یوحنا گناہ سے معافی کا بپتسمہ دیتا تھا۔ کیا اس سے گناہ معاف ہو جاتے تھے ؟ اگر ہاں تو پھر یسوع کے کفارہ کی ضرورت ہی کیا تھی
  8. متی اگر رسول تھا تو رسول ہونے کی چار شرائط کیا متی میں پائی جاتی تھیں ؟
  9. یسوع کی صداقت کی کوئی ایسی پیشگوئی بتائیں جس کی یہود نے کوئی تاویل نہ کی ہو ؟
  10. کیا یہودی کسی موسیٰ کے مثیل کے منتظر تھے جس عورت سے پیدا ہوگا اور خدا ئی کا دعویٰ کرے گا؟
  11. علماء یہود کے ہاں نجات کی تعلیم موسیٰ سے ملاکی تک کیا تھی ؟
  12. عبرانیوں کے خط باب 5 فقرہ 7 سے یسوع کے صلیب سے بچ جانے کا ثبوت ملتا ہے ۔
  13. یسوع کی دادی بت سبع اور دادا داود کا ناجائز تعلق تھا اس لیے یسوع آسمانی برکتوں کا وارث نہیں ہوسکتا
  14. کیا موجودہ انجیلوں کی طرح اور انجیلیں بھی انسانی خیال سے بنا ئی جا سکتی ہیں یا نہیں ؟ اگر ہاں تو ان انجیلوں کے الہامی ہونے کی دلیل کیا ہوئی ؟
  15. اگر برائی خدا سے دور کرتی ہے اور جہنم کی وارث بنائی تہے تو نیکی خدا کے نذدیک کر کے جنت کی وارث کیوں نہیں بنا سکتی ؟
  16. پیدائش باب 3 فقرہ 13 تا 29 میں جو آدم کے گناہ کی سزائیں لکھی ہیں وہ کفارہ کے ماننے والوں کو بھی کیوں ملتی ہیں ؟
  17. پیدائش باب 3 فقرہ 15 میں شیطان کا سر کچلنے کا ذکر ہے ۔ کیا یسوع نے شیطان کا سر کچلا ؟ اگر ہاں تو عیسائی گناہ کیوں کرتے ہیں؟
  18. تثلیث کا رد اور یسوع کی خدائی پر سوال