مکتبہ احمدیہ مسلمہ ۔ معہ فہرست مضامین

  1. انگریزوں کی ہندوستان آمد اور ایک نئے مذہب کا تعارف
  2. ہندوستان میں علمی مسندکے وارث
  3. شاہ عبد العزیز محدث دہلوی
  4. شاہ عبد العزیز کے شاگر کے شاگرد مولوی آل حسن موہانی
  5. مولوی رحمت اللہ کیرانوی
  6. مولوی قاسم نانوتوی
  7. سید ناصرا لدین منصور
  8. عنایت رسول چڑیا کوٹی
  9. مولوی محمد علی مونگیری
  10. ابو محمد عبد الحق مفسر حقانی
  11. مباحثہ شاہ جہانپور
  12. ہندوستان میں پادریوں کی آمد
  13. پادریوں کی زبان اور شرافت
  14. مولوی آل حسن اور پادری فنڈر کی مراسلت
  15. علماء اسلام کی مدافعت عن الاسلام کاپادریوں پر خوفناک اثر
  16. علمائے حق کا شان دار ماضی
  17. عیسائیوں کے خلاف علماء اسلام کے قلمی معرکے
  18. مرزا غلام احمد علیہ السلام کی رد عیسئایت کی خدمات
  19. پادریوں کی علمی ناکامی پر انگریز کی نئی حکمت عملی
  20. مسلمانوں میں فرقہ وارانہ اختلاف کا آغاز
  21. آزادی رائے کے نام پر اختلافات کی حوصلہ افزائی
  22. علماء اسلام کی رد عیسائیت میں جدوجہد
  23. رد عیسائیت کی عربی میں لکھی کتابیں
  24. پاکستان بننے کے بعد کی اسلامی محنت
  25. مولوی آل حسن موہانی کا تعارف
  26. مولوی آل حسن کا عقیدہ بشریت انبیاء
  27. دوسرے مولویوں سے اس عقیدہ کی تائید
  28. مولوی آل حسن کے بارے میں شیعہ ہونے کا گمان
  29. مولوی آل حسن موہانی پر توہین عیسیٰ ؑ کا الزام
  30. مولوی رحمت اللہ کیرانوی کا موقف اور عقیدہ
  31. مولوی آل حسن موہانی کی دیگر تالیفات
  32. کتاب الاستفسار کا پیرایہ بیان
  33. آل حسن موہانی کا خلوص و ابتہال
  34. میزان الحق میں زبردست ترمیم و تبدیل
  35. آل حسن موہانی کی اولاد
  36. حسرت موہای مہانی کا ذکر
  37. باب۔ مطالعہ عیسائیت
  38. قوموں کا باہمی تمدنی اختلاط
  39. دو صدی پہلے کے ہندوستان کے حالات
  40. دوصدی بعد کے انگلستان کے حالات
  41. تین تاریخی قدیمی مذاہب
  42. تین متقارب آسمانی مذاہب
  43. پیغمبروں کا باہمی علمی تعلق شرائع مختلف اور دین ایک
  44. محمد ﷺ پر ایمان لائے بغیر پچھلے پیغمبروں کی بھی تصدیق نہیں ہو سکتی
  45. عیسائیت اپنے کو یہودیت کا وارث سمجھتی ہے
  46. عیسائیت اور یہودیت میں تاریخی رشتہ
  47. تاریخ اور تنقید میں ترتیب عمل
  48. موجودہ عیسائیت کہاں تک عیسیٰؑ تک جا پہنچتی ہے
  49. باب۔ تاریخ بنی اسرائیل
  50. ابراہیم ؑسے دو سلسلے چلے
  51. بنی اسرائیل فلسطین میں تھے
  52. بنی اسرائیل مصر چلے آئے
  53. بنی اسرائیل کے بارہ قبائل
  54. مصر کا اقتدار پھر قبطیوں کے پاس
  55. مصر میں بنی اسرائیل کا دور غلامی
  56. باب ۔ تاریخ یہود پر ایک نظر
  57. مصر سے نکلنے کے بعد وادی تیہ میں خانہ بدوش زندگی
  58. موسیٰؑ کی وفات
  59. مرزا غلام احمد علیہ السلام کا عقیدہ حیات موسیٰؑ
  60. موسیٰؑ کے خلیفہ یوشع بن نون
  61. قاضیوں کا دور
  62. کنعانیوں کا دور
  63. سموئیل پیغمبر کی بعثت
  64. طالوت کی سیاسی سربراہی
  65. داود ؑ کی بادشاہی ، ملوکیت فی نفسہ عیب نہیں
  66. سلیمان ؑ عیسیٰ ؑ سے ہزار سال پہلے ہوئے
  67. بنی اسرائیل دو حصوں میں بٹ گئے ، جنوبی سلطنت کا مرکز یروشلم
  68. یروشلم پر بخت نصر کا حملہ
  69. سائرس کا شاہ بابل پر حملہ ، یروشلم رومی اقتدار میں
  70. تاریخ بنی اسرائیل اسلام کی نظر میں
  71. بنی اسرائیل کی دو بار قومی تباہی
  72. بنی اسرائیل میں تورات کے مطابق فیصلے
  73. بنی اسرائیل کی روحانی پیشوائی ختم اور بنی اسماعیل کی پیشوائی کا آغاز
  74. تورات کا موجودہ تعارف
  75. اسلامی عقیدہ میں توریت موسیٰؑ کی تالیف نہیں
  76. عیسائیوں کے ہاں پرانے عہد نامے کی پہلی پانچ کتابیں موسیٰ کی تالیف ہیں ۔
  77. مقام نبوت پرانے عہد نامے میں
  78. نبی کا ترجمہ غیب جاننے والا
  79. اسلام میں نجات ایک وہبی منصب ہے
  80. پرانے عہد نامہ کی رو سے مقام نبوت کا اخلاقی کردار
  81. بنو اسرائیل کا حکومتی کردار
  82. بنی اسرائیل کے انسانیت سوز مظالم
  83. یہودیوں کی اخلاقی حلات
  84. علمائے یہود عیسیٰؑ کی نظر میں
  85. خدا کے خوف سے خالی قوم
  86. گائے پرست قوم کی نظر و فکر
  87. گائے پرست سونے میں کھوئے ہوئے تھے
  88. مال حاصل کرنے کے لیے اپنے آدمی کا قتل اور گائے ذبح کرنے کا واقعہ
  89. پرانے عہد نامہ میں عقیدہ توحید
  90. یہودیوں کا پیمانہ کیلنڈر
  91. بنی اسرائیل میں عیسیٰؑ کی پیدائش
  92. یہود کی عالمی گنتی اور ان کے اخلاقی مذہبی اور سیاسی دائرے
  93. عیسائیوں کا یہودیوں سے انتقامی سلوک
  94. باہمی اچھے تعلقات کا نیا موڑ
  95. بنی اسرائیل کی موجودہ سلطنت کیسے قائم ہوئی
  96. یہودیوں کا عہد عتیق میں عقیدہ توحید
  97. عیسائیوں کا عہد جدید میں پیچیدہ عقیدہ
  98. باب ۔ عیسائیت
  99. عیسیٰؑ کے آنے سے دنیا ایک نئے مذہبی تصور سے آشنا ہوئی
  100. عیسائیوں کے ہاں عیسیٰ ؑ انسان نہیں
  101. آپ کی ذات اور نوع دوسرے انبیاء سے مختلف ہے
  102. آخرت کی نجات کا نیا تصور
  103. پرانے عہد سے نئے عہد پر آنے کا مسیحی زینہ
  104. اسلام کی رو سے عیسیٰ ؑ صف انبیاء میں
  105. عیسائیت سے مراد ان دنوں عیسیٰؑ کا اصل دین و مذہب نہیں
  106. شریعت اور فضل کے دو متوازی نظریے
  107. عیسیٰ ؑ کی پیدائش
  108. عیسیٰ ؑ کی بن باپ پیدائش
  109. احمدیوں کا اس بارے میں عقیدہ
  110. مسلمانوں کا عیسیٰؑ کے بن باپ پیدا ہونے کا عقیدہ
  111. امام فخر الدین رازی کا بیان
  112. مفتی محمد عبدہ مصری کا بیان
  113. ثناء اللہ پانی پتی کا بیان
  114. علامہ آلوسی کا بیان
  115. احمدیوں کا عذر لنگ
  116. عیسیٰ ؑ کا نسب نامہ
  117. داود ؑ تک 28 نام یا 43
  118. فلسطین مختلف نظریات کی آماجگاہ
  119. حمورابی احکام کی درآمد
  120. یونان کے مافوق الفطرت تصورات
  121. افلاطونیت
  122. متھرازم کی جھلک، مسیح ؑ کے چند وقائع حیات
  123. یوسف مریم اور مسیح مصر میں
  124. بارہ برس کی عمر میں عید کے دن یروشلم میں
  125. تیس برس کی عمر میں مسند وعظ پر
  126. اردن کے کنارے روح القدس کا نزول
  127. ابلیس کی جدوجہد
  128. یسوع کے پاس ایک انجیل تھی
  129. مسیح کے معنی اور اس کی خبر پیشیں
  130. آہ ۔ وہ انجیل گم ہو گئی
  131. مسیحی علماء کی رائے مسیح کی انجیل اور موجودہ انجیلوں کے بارے میں
  132. چار انجیلوں کی تدوین
  133. انجیل مرقس
  134. انجیل متی
  135. پہرے داروں اور یہودی سرداروں کی ملی بھگت
  136. ایک نہیں بہت سے مردے جاگ اٹھے
  137. لوقا کی انجیل
  138. مچھلیاں پکڑنے کا واقعہ
  139. انجیل یوحنا
  140. یوحنا بن زبدی کون ہے
  141. انجیل متی اور مرقس کی مشترکہ آیات
  142. انجیل متی اور لوقا کی مشترکہ آیات
  143. انجیل لوقااور مرقس کی مشترکہ آیات
  144. انجیل یوحنا میں واقعہ قربانی کا کوئی ذکر نہیں
  145. انجیلیں ابتداء میں کن ادوار سے گزریں
  146. پولوس کے خطوط چاروں انجیلوں سے پہلے کے ہیں
  147. سو کے قریب انجیلیں لکھی گئی تھیں
  148. متی اور مرقس کا پرانے عہد نامے سے تسلسل
  149. چاروں انجیلوں میں اختلاف
  150. یسوع کے آخری کھانے کے بارے میں انجیلوں کے مختلف بیانات
  151. کفارے کی قربانی کا آغاز
  152. یسوع کے نام سے اس کا آغاز
  153. حواریوں نے ایک وعظ بہت ناپسند کیا
  154. انجیل یوحنا کا قدیمی دور میں انکار
  155. تاریخ اناجیل میں یوحنا بزرگ کی آورد
  156. تاریخ تدوین اناجیل میں ناقابل فہم تعارضات اور مشکلات
  157. قرآن کریم کی تدوین میں قطعیت
  158. باب ۔ اناجیل کا تنقیدی مطالعہ
  159. خدا کے بارے میں عیسائیوں کا موقف
  160. ایک میں تین اور تینوں میں ایک
  161. عیسائی انبیاء کے پچھلے عہد سے نکل آئے
  162. اناجیل سے عقیدہ توحید کا ثبوت
  163. عقیدہ تثلیث دین فطرت نہیں ہے
  164. پادری جے علی بخش کا بیان
  165. عیسیٰ کا وعظ کہ تو خدا سے مانگے
  166. خدا کے علم میں کوئی شریک نہیں
  167. معجزات خدا کی قدرت سے صادر ہوتے ہیں
  168. تمام انبیاء کا دولہا اور امام
  169. جو عورت سے پیدا ہو کیوں کر پاک ٹھہرے
  170. عیسائیوں کا عقیدہ نجات
  171. پہلے انبیاء کے ہاں راہ نجات تو یہ تھی
  172. نجات کا اب یہ نیا عہد باندھا گیا
  173. نجات کی راہ مسیح کے سولی چڑہنے میں ہے
  174. عقیدہ شفاعت اور عقیدہ کفارہ میں فرق
  175. طہارت کی ضرورت نجاست کے بعد ہوتی ہے
  176. عقیدہ کفارہ اسلام کی نظر میں
  177. نیک اعمال برے اعمال کا کفارہ ہیں
  178. بعض گناہوں پر کفارے کے احکام
  179. اسلام میں قربانی کی حقیقت
  180. قربانی کی بنیاد بڑی ذات کی رضا طلبی اور یہ کہ ادنی اعلیٰ پر قربان ہو
  181. جہاد میں انسانی جانوں کی قربانی
  182. عید الاضحیٰ کے دن جانوروں کی قربانی
  183. عیسائیوں کا عقیدہ کفارہ
  184. یسوع کی قربانی کا آغاز
  185. عیسائیوں کا ایک اہم سوال
  186. شجرہ ممنوعہ پر جانے کی سزا جو پہلے ٹھہرائی گئی تھی
  187. عید فسح کے دن آخری کھانا
  188. گرجاوں میں زندگی کی روٹی کاٹنا
  189. عیسائیوں کا طریق عبادت کیا ہے ؟
  190. پانی کے خون بننے کا تصور
  191. روح القدس کے اترنے کا اثر کہ حواری غیر زبانیں بولنے لگے
  192. روح القدس کا اترنا صرف ایک کیفیت ہے
  193. انجیل میں لفظ یعنی کا لا یعنی اضافہ
  194. عیسائیوں کے ہاں ہر سچے ایماندار میں روح القدس اترا ہوا ہے
  195. کتاب مقدس میں محمد ﷺ کی خبر
  196. آنے والا بنی سرائیل کے بھائیوں میں آئے گا۔
  197. آتشین شریعت لے کر آنے کی خبر
  198. سلیمان ؑ کی پیشگوئی
  199. فتح مکہ کے دن دس ہزار صحابہ ؓ کا لشکر
  200. آنے والے شیلوہ کی بشارت
  201. جب یہود سے ریاست کا عصا جدا ہوا اس کا آخری دن یوم خیبر تھا
  202. سلامتی کا شہزادہ کون ہے
  203. یوحنا کی گواہی اور وہ نبی کا ابہام
  204. مسیح کا شاگردوں کی دل جوئی کرنا
  205. جب وہ آئے گا تو سچائی کی راہ دکھائے گا
  206. کتاب الاستفسار شروع
  207. عالم کی سرداری کا حکم کس کے نام نکلا تھا
  208. مبدا کل کائنات یکتا اور بے ہمتا ہے
  209. باب مقدمہ
  210. عیسائیوں کے ساتھ ہمارے اہم نزاعی مسئلے
  211. تثلیث حق ہے یا باطل ہے
  212. محمد ﷺ کی نبوت کی تصدیق
  213. تورات اور انجیل میں تحریف واقع ہے
  214. استفسار کونسے کس مسئلہ پر ہیں
  215. بائبل عہد عتیق اور عہد جدید کے مجموعہ کا نام ہے
  216. موسیٰ ؑ کی پانچ کتابیں
  217. عہد عتیق کی 34 کتابوں کے نام ، چار انجیلوں کے نام
  218. عہد جدید کے 24 رسالوں کے نام ، مجموعہ اسفار خمسہ تورات الواح نہیں ہے
  219. عزرا نبی کے ملائے ہوئے جملے
  220. تورات کی تین کتب کسی نبی کی طرف منسوب نہیں
  221. عیسائیوں میں باہمی فرقہ بندی
  222. پہلا استفسار
  223. مبداء کل کائنات واجب الوجود ہے ، اس کی شانیں اور حد بست، بے نیازی
  224. یسوع محدود ہے پس خدا نہیں ہوسکتا
  225. ہندووں کے اکابر میں بہت سے بن باپ پیدا ہوئے
  226. مردے یسوع کے شاگردوں نے اور الیاس نے بھی زندہ کیے
  227. دوسرا استفسار
  228. یسوع جسم میں نہیں ذات میں خدا ہیں ۔ جواب
  229. خدا تین ہی کیوں ہیں
  230. اقانیم ثلاثہ میں ذات و صفات والا تعدد نہیں ہوسکتا کیوں کہ ان میں تقدیم و تاخیر ہے
  231. مبدائے کائنات کی نسبت بعض جگہ قوی
  232. تیسرا استفسار
  233. تعدد شخصی کی وجہ سے یسوع خدا کے بندے اور رسول تھے
  234. اپنے خدا اور تمہارے خدا کے پاس جاوں گا۔
  235. میں آپ سے کچھ نہیں کہہ سکتا ۔ یعنی اپنی طرف سے
  236. اچھا کوئی نہیں مگر جو خدا ہے
  237. قیامت کب آئے گی کوئی نہیں جانتا مگر باپ
  238. عجز اور قدرت علم اور جہل کا تعلق باطن سے ہے جسم سے نہیں
  239. الرب الٰہنا رب واح د
  240. وہ تجھے اکیلا خدا جانیں ۔ دنیا جانے تو نے مجھے بھیجا ہے
  241. تمہارا باپ ایک ہی ہے جو آسمان پر ہے
  242. وہ تجھے اکیلا خدا جانیں ۔ دنیا جانے تو نے مجھے بھیجا ہے
  243. دنیا جانے تو نے مجھے بھیجا ہے
  244. تمہارا باپ ایک ہی ہے جو آسمان پر ہے
  245. مرتبہ تعینات میں عیسیٰ مسیح مرشد ہے
  246. کیا بائبل میں یسوع کے خدا ہونے کا ذکر ہے ؟
  247. تعارض کے موقع پر عقل کی راہنمائی کیا ہے ؟
  248. ان کی دلالت معنی الوہیت پر قطعی نہیں ہے
  249. ان کی تفسیر عیسیٰ نے خلاف ظاہر کر دی ہے
  250. حقیقی معنی کی رو سے تم بھی طالب تاویل ہو
  251. صاحب مفتاح الاسرار کے دلائل
  252. ابن اللہ کا لفظ حالانکہ ہر دیندا آدمی خدا کا بیٹا کہلاتا ہے
  253. تم نیچے سے ہو اور میں اوپر سے ہوں
  254. ابراھیم ؑ سے یسوع کا تقدم
  255. آسمان اور زمین پر سارا اختیار مجھے دیا گیا
  256. باپ کی نہٰں ساری حکومت بیٹے کی ہے
  257. زمانے کے آخر تک ہمیشہ تمہارے ساتھ ہوں
  258. جہاں دو یا تین جمع ہوں میں ان کے ساتھ ہوں
  259. داود کا بیٹا ہونے سے انکار
  260. میں اور باپ ایک ہیں
  261. ہر ایک تم میں سے خدا کا فرزند ہے
  262. کلام کو استقرار حاصل نہیں یہ تو فانی ہے
  263. عیسیٰؑ کا بن باپ پیدا ہونا خدائی کی دلیل نہیں ۔ یہ کن کا ظہور ہے
  264. چوتھا استفسار
  265. خدا کا تین دن دوزخ میں رہنما کیا حقیقت ہے
  266. مرتبہ صادریت حدوث ذاتی کو مستلزم ہے اس مین قدم ذاتی اور بے نیازی کیسے
  267. پانچواں استفسار
  268. کتاب موسیٰ میں کلام بشر کدا کے کلام سے مخلوط ہے
  269. کلام بشر سارا موسیٰ کا ہی نہیں اوروں کا بھی ہے
  270. موسیٰ 80اورہارون 83 برس کا تھا جب فرعون سے باتیں کیں
  271. موسیٰؑ کنعان پہنچے تک من کھاتے رہے
  272. یہوواہ نے موسیٰ کو خطاب کر کے فرمایا
  273. عمران سے موسیٰ اور ہارون اور مریم کو جنا
  274. یائیر موسیٰ کے بعد ہوا ہے
  275. موسیٰ مواب کی سرزمین میں مر گیا
  276. یوشع کی کتاب میں وہ باتیں جو یوشع نے نہیں لکھیں
  277. سموئیل کی کتاب میں سموئیل کے مرنے کا ذکر
  278. چھٹا استفسار
  279. الٰہی بات پہنچانے کے سوا پیغمبر معصوم نہیں
  280. کیا بائبل کا کوئی ایسا حصہ ہے جو حرف بحرف خدا کا کلام ہو
  281. پیغمبروں کی باتیں بشریت کے تقاضے سے
  282. کتاب پیدائش اور اعمال میں کھلا تضاد
  283. ستر اور پچھتر کا فرق
  284. ساتواں استفسار
  285. ہارون نے بچھڑے کو معبود قرار دیا
  286. انبیاء قوم کی راہنمائی میں بھی معصوم نہ رہے
  287. اسحٰق کو یعقوب نے الٰہی برکت دینے میں مغالطہ دیا
  288. کیا خدا کے سامنے بھی جعل سازی چل سکتی ہے
  289. خدا کی یعقوب سے رات بھر کشتی رہی
  290. پادری فنڈر کا دعویٰ کہ کشتی یسوع سے تھی
  291. آٹھواں استفسار
  292. تورات کے ابدی احکام میں ختنہ کا حکم
  293. یسوع کا بھی ختنہ ہوا تھا
  294. پولوس کا خط گلتیوں کے نام اور اس میں ختنے کا انکار
  295. زیر جامہ زانو تک رہے
  296. احکام میں ابدیت کا تکرار
  297. نئے عہد کی ضرورت اور انتظار
  298. عہد قدیم اور عہد جدید میں تقابل
  299. یا ابدی کا اعلان غلط یا موقوفی غلط ہے
  300. نواں استفسار
  301. توریت میں تبدیلی کی دوسری کتابوں سے شہادتین
  302. یہودیوں نے خدا پر جھوٹ باندھے فارسی میں اسے بیوفائی سے بدلا گیا
  303. کاہنوں سے لے کر بنیوں تک جھوٹ بولتے رہے
  304. خدا کی باتوں میں تبدیلی کرتے رہے لیکن مترجموں نے صرف جھوٹ بولنے کا کہا
  305. یسوع کا الزام کی تم نے کلام اللہ کو باطل کر دیا ہے
  306. انجیل میں تبدیلی کی آئیندہ خطوط سے شہادتیں
  307. لوگ یسوع کی انجیل کو بدلنا چاہتے ہیں
  308. انجیل میں تحریف کی فکر قرن اول سے شروع ہو گئی تھی
  309. پطرس حواری کا خط کہ بدعات شروع ہو جائیں گی
  310. دین کا حلیہ خفیہ طور پر بدلا جائے گا
  311. عیسائیوں کا اپنا اقرار کہ بائبل میں تبدیلی ہوئی ہے
  312. کتاب مقدس کا مقدمہ عربی از اربانوس ثامن
  313. عذر سہو کاتب اور سہو مترجم ہر جگہ نہیں ہو سکتا
  314. دسواں استفسار
  315. کتاب پیدائش کے ترجموں میں روح اللہ کو خدا کی جگہ رکھا گیا ہے
  316. نعمت کا باغ آبادی سے باہر لگا پھر نعمت کا لفظ نکال دیا گیا
  317. عدن میں پورب کی طرف کے الفاظ بڑھا دیے گئے
  318. تم خدا کی طرح ہو جاو گے کو تم فرشتوں کی طرح ہو جاو گے کر دیا
  319. تبدیل و تحریف کی اور مثالیں جن میں ترجموں کی غلطی ممکن نہیں
  320. عیسائی عقیدہ کی خدا کا منہ یسوع کے علاوہ کسی نے نہیں دیکھا
  321. اللہ تعالیٰ کس طرح ہاجرہ پر متجلی ہوا
  322. تمر یہودا کی بہو نے زنا کیا اور فارس پیدا ہوا، اسے عیسائی مریم کے اجداد میں ذکر کرتے ہیں
  323. سارہ ابراھیم کی علاتی بہن تھی
  324. بودو باش اختیار کا ترجمہ مر گیا کیسے ہو گیا
  325. میں خدا سے ڈرتا ہوں کہ میں خدا کی جگہ ہوں ۔ بدل دیا گیا
  326. استاد کے لیے خدا کے لفظ کا استعمال ہوا ہے
  327. موسیٰ و ہارون کے والد عمران نے پھوپھی سے شادی کی ۔ اب پھوپھی کو بدل کر چچا کی بیٹی بنا دیا گیا
  328. موسیٰ کے معبود ہونے کی تصریح پھر اسے استاد بنا دیا
  329. یکو ن اللہ معکم کو معاذ اللہ سے بد ل دیا
  330. احکام عشرہ میں غلاموں اور باندیوں کا ذکر
  331. نئے ترجموں میں اسے خادم اور خادمہ سے بدلا گیا
  332. یموت اور یقتل میں ادل بدل
  333. استاء اور مثقال میں ادل بدل
  334. اپنا چہرہ دکھا کو اپنی معرفت دے سے بدلنا
  335. گوشت کھایا کرو خواہ پاک خواہ ناپاک
  336. برص اور بلا کے لفظوں کا ادل بدل
  337. جزیہ کا لفظ کس طرح خدمت سے بدلا گیا
  338. باپ اور خالق ایک معنی میں
  339. زبور میں تبدیلیاں
  340. یسعیا کی کتاب کا باب 36 ہر گز یسعیا کا کلام نہیں
  341. تضادات انجیل
  342. عوام اور بت پرست میں ادل بدل
  343. کفاف اور جلدی میں ادل بدل
  344. اچھا کوئی نہیں مگر ایک جو خدا ہے ۔ اگلے ایڈیشن میں لفظ ایک اڑا دیا
  345. یہ وہ نبی ہے کا غلط عربی ترجمہ ہذا الرجل نبی
  346. انجیل کے چھ مختلف نسخے
  347. توریت کے منسوخ نہ ہونے کا مطلب متبادل نسخوں میں کس طرح ہے
  348. انبیاء کی خبریں نہیں بدلتیں رہے احکام تو یہ مختلف وقتوں کے مناسب ہوتے ہیں
  349. وہ احکام جو یسوع نے تورات کے موقوف کئے
  350. گیارہواں استفسار
  351. عیسائیوں کے دو دعوے
  352. مولفین انجیل نے مسیح کا کلام جو نقل کیا وہ ان سے بلا واسطہ سنا ہوا ہے
  353. مولفین انجیل نے جو کچھ لکھا ہے وہ یہے جو روح القدس کہتا گیا
  354. اہل اسلام کے تین دعوے
  355. مولفین انجیل نے یسوع کا کلام ان سے بلا واسطہ سن کر نہیں لکھا ہے
  356. اناجیل کے لکھنے میں روح القدس کی ترجمانی شامل نہیں رہی
  357. روح القدس سے مستفیض ہونے سے کتاب کی محفوظیت لازم نہیں آتی
  358. اناجیل میں کہیں بلا واسطہ سننے کا اشارہ نہیں ہے
  359. سمعیات میں اصل سماع ہے
  360. انجیلیں سمعی لکھی گئی ہیں نہ کہ روح القدس سے
  361. تھیوفلی سے خطاب کرنے والا کون تھا ۔ ان میں سے نہیں جن پر آپ بعد صلیب ظاہر ہوئے
  362. انجیل میں لکھنے والے کا ذکر بتلاتا ہے کہ اصل انجیل کوئی اور تھی
  363. ایک نواری بیٹا جنے میں اصل لفظ جوان عورت تھا
  364. پہلی کتابوں میں کہیں نہیں کہ وہ ناصری کہلائے گا
  365. ہیرودیس یحییٰ کی ملامت خوشی سے نہ سنتا تھا
  366. مچھلیوں کے شکار میں دو متعارض روایتیں
  367. دو دیوانے اچھے ہوئے تھے یا ایک
  368. شفا یافتہ عورت کو مسیح نے کب پہچانا تھا
  369. یسوع اور یوحنا کے قول میں ایلیا کے بارے میں تعارض کہ وہ کون تھا
  370. ایک ایلیا پرانے عہد نامے میں مذکور ہے جس نے مردے کو زندہ کیا تھا
  371. یوحنا کو اس ایلیا کی روح ہا رہی تھی
  372. ہیرودیس یوحنا کی باتیں خوشی سے سنتا تھا
  373. امام سبت کے دن ناپاک کام کر کے بھی بے گناہ ہیں
  374. سبت کے احکام ابدی نہیں یسوع صاحبِ اختیار ہے
  375. یسوع کا داود کے عمل سے حجت پکڑنا
  376. یسوع کو خطاب اے خدا وند ابن داود
  377. میں صرف بنی اسرائیل کی طرف بھیجا گیا ہوں
  378. یسوع کے عمل سے نسخ کا ثبوت
  379. معجزے میں کبھی کہنے کے سوا کچھ اور کرنا بھی ہوتا ہے
  380. یسوع کا اپنے مختار کل ہونے کی نفی کرنا
  381. زبدی کے بیٹوں کا یسوع کے پاس آناحالانکہ وہ بارہ شاگردوں میں پہلے سے تھے
  382. چھ دن بعد اور آٹھ دن بعد میں کونسی بات صحیح ہے
  383. یہودیوں کا مشورہ عید نجات سے دو دن پہلے ہوا یا چھ دن پہلے
  384. صلیب اٹھانے والا شمعون تھا یا یسوع
  385. دو چور صلیب دیے گئے یا ایک
  386. اسی دن فردوس اعلیٰ میں جمع ہونا کیسے ممکن ہوا
  387. یسوع گرفتاری کے وقت کیسے پہچانے گئے
  388. یسوع کو خود بتانے سے گرفتار کیا یا یا یہودا کے بتانے سے
  389. انجیل میں یرمیاہ نبی کا غلط حوالہ
  390. ہم نے اپنے دعوے کے دو عنوان ثابت کر دیے ہیں اب تیسے کی بحث سنیں
  391. روح القدس سے مستفیض ہونا مستلزم عصمت نہیں
  392. روح القدس کے اترنے کی مختلف صورتیں
  393. بارہ شاگرد استاد کے سامنے روح القدس سے مستفیض ہوئے تھے
  394. ان بارہ میں یہودا یسوع کے پکڑانے والا بھی تھا
  395. بارہ شاگردوں میں سب سے بزرگ شمعون پطرس تھا
  396. پطرس کو یسوع نے شیطان کہا
  397. یسوع کے سب شاگرد ٹھوکر کھا گئے حالانکہ سب کو روح القدس ملا تھا
  398. پطرس نے جھوٹی قسم کھا کر تین بار انکار کیا
  399. یسوع پر ایمان لانے والے شاگردوں کو مجتہدین جانتے تھے
  400. شاگردوں کا آپس کا اختلاف مجتہدانہ تھا روح القدس سے ممتئی ہونے سے وہ نبی نہ ہو گئے تھے
  401. پولوس کے فتنے کے بارے میں دو عمل رہے
  402. پطرس دھوکے میں رہا کہ فرشتہ کیا کہہ رہا ہے
  403. برنباس بھی یہودیوں کے مکر میں آ گیا
  404. یسوع پر ایمان لانے سے یہی لوگ نیک گنے جائیں گے
  405. شریعت پر عمل کرنے سے کوئی نیک نہ گنا جائے گا
  406. مجھے خداوند کہنے والا آسمانی بادشاہت میں داخل نہ ہو گا جب تک وہ خدا کا فرمانبردار نہ ہو گا
  407. آخرت میں یسوع اپنے کئی ماننے والوں کو کہیں گے میرے پاس سے دور ہو جاو
  408. بارہواں استفسار
  409. آدمی کے معتمد اور باوضع ہونے کے نشانات
  410. ثقہ آدمی کی کہی ہوئی بات
  411. ثقہ کسی دوسرے کی توثیق کر دے تو وہ دوسرا بھی لائق اعتماد ہو جاتا ہے
  412. کئی ثقہ بیان کریں تو خبر متواتر بنتی ہے
  413. سمعیات میں تواتر اسناد ثبوت عقلی ہے
  414. لکھی ہوئی دستاویزات کی تحقیق بھی اسی طرح
  415. اہل اسلام کے فن روایت کی تدوین
  416. قرآن بالفاظہا ہمیں وصل و فصل محمد ﷺ سے ماخوذ ہے
  417. سمعیات بظن غالب واجب العمل ہوتی ہے
  418. عیسائیوں کے ہاں سمعیات کے ثبوت کا کیا قاعدہ ہے ؟
  419. ہم کو اس بات سے انکار ہے کہ بائبل میں جو کچھ ہے وہ کسی نبی کا کیا ہوا ہے
  420. موسیٰ کی کتاب مین بعض حصے موسیٰ کا کلام نہیں ہیں
  421. بعض عبارات موسیٰ کی عبارات سے مطابق نہیں ہیں
  422. نحمیاہ کی کتاب کے پیرایہ بیان میں تبدیلی
  423. موسیٰ کی کتاب بھی گم ہو گئی تھی
  424. مجموعہ تورات کا ہر گز قابل وثوق نہیں رہا
  425. انجیل کی سند یسوع تک نہیں پہنچتی
  426. انجیلوں کی تالیف میں مختلف سنین کا بیان
  427. تیرھواں استفسار
  428. موسیٰ اور یسوع کے معجزات کی تصدیق محمد ﷺ کی تصدیق کے بغیر ممکن نہیں
  429. آدمی کی زندگانی ایک سو بیس برس تک ہے
  430. کسی کی عمر دو سو سال سے کم نہیں ہوئی
  431. ابراہیم کی اولاد اتنی ہو گی جتنی دریا کی ریت
  432. فرعون کے جادوگروں نے بھی پانی کو سرخ اور موسیٰ و یسوع کے معجزوں کا معائنہ کر لیا
  433. بنی اسرائیل کی سلطنت دو حصوں میں منقسم ہو گئی
  434. افرائیم اور یروشلم میں
  435. لفظ مسیح کا اطلاق یسوع کے علاوہ دوسروں پر بھی ہوا ہے
  436. تم اذیت دیے جاو گے یہ ہر گز کوئی پیشگوئی نہیں
  437. تین دن رات قبر میں رہنے کی پیشگوئی غط نکلی
  438. سچے مسیح مرزا غلام احمد علیہ السلام پر الزام
  439. تم سب آج کی رات مجھ سے بیزار ہو گے
  440. انبیائے بنی اسرائیل کی پیشگوئی پر شہبات صرف پادریوں کی تقریروں پر مبنی ہیں
  441. چودھواں استفسار
  442. وہی مسیح دوبارہ آئے گا جو پہلے ہو گزرا ہے
  443. جھوٹے نبی ہونے کی پیشگوئی
  444. نبی کے معنی غیب کی خبر دینے والا
  445. یہ معنی جھوتے پر منطبق ہو سکتے ہیں سچے رسول پر نہیں
  446. جھوٹا مدعی نبوت معجزہ نہیں دکھا سکتا
  447. در صورت تسلیم الوہیت عیسویہ کیا وجہ ہے کہ ہر ایک چیز پر خدا ہونے کا احتمال نہ ہو
  448. پندرہواں استفسار
  449. معجزات کس طرح ثابت کئے جا سکتے ہیں
  450. محمدﷺ کے معجزات دو ہزار کے قریب ہیں
  451. انبیاء کا ہر طرح کا کلام وحی نہیں ہوتا
  452. یسوع کا کلام کلیۃ وحی الٰہی نہیں ہو سکتا
  453. وحی الٰہی یسوع میں یسسوع کے فعلی معجزے کا ذکر ہی نہیں
  454. قرآن شریف میں محمد ﷺ کے کئی معجزات کا ذکر ہے
  455. پادروں کا چوتھا مغالطہ
  456. پادروں کا پانچواں مغالطہ
  457. پادروں کا چھٹا مغالطہ
  458. پادروں کا ساتواں مغالطہ
  459. وحی مصطفوی ﷺ دو قسم کی ہے
  460. بقول اربانوس ثامن انبیاء بنی اسرائیل پابند نہ تھے کہ کلام الٰہی بالفاظہ نقل کریں
  461. انجیلوں میں بحذف مکرر 17 پیشگوئیاں ہیں
  462. باقی چار پیشگوئیاں
  463. بادشاہت کی خوشخبری تمام دنیا میں دی جائے گی
  464. مرغ کے بانگ دینے سے پہلے تو تین بار میرا انکار کرے گا
  465. جب وہ تمہیں پکڑوائیں فکر نہ کرنا
  466. تو دریا پر جا کر بنسی ڈال اور جو مچھلی کہ پہلے نکلے اسے لے
  467. پادریوں کا آٹھواں مغالطہ کہ بعض احادیث معجزات ضعیف ہیں
  468. پادریوں کا نواں مغالطہ کہ سنی اور شیعہ روایات الگ الگ ہیں
  469. وجوہ ثبوت اعجاز محمد ﷺ
  470. روایات اخراج شدہ ائمہ حدیث کو روایات انجیل پر ترجیح حاصل ہے
  471. آثار موسویہ سبب فترت منداس ہو گئے تھے پھر بذریعہ یسوع از سر نو ثابت ہوئے
  472. اب ثبوت نبوت موسویہ اور عیسویہ موقو ف ہے محمد کی نبوت کے ثبوت پر
  473. بائبل میں مذکور معجزات سے یسوع کی حقیقت ثابت نہیں ہوتی
  474. محمد ﷺ کے بعض معجزات اور سچائی کے نشان
  475. معجزہ شق القمر چاند کے دو ٹکڑے ہونے کا بیان
  476. یہ روایت آٹھ صحابہ سے صحت سند سے مروی ہے
  477. مولوی آل حسن موہانی کا پادریوں سے مفصل سوال
  478. یوشع کے عہد میں سورج اور چاند کا ٹھہرے رہنا
  479. یسعیاہ کے عہد میں ڈھلے سائے کا پھر چڑھنا
  480. آسمان کے دروازے کھلنا
  481. دوپہر سے تیسرے پہر تک آسمان تاریک رہا
  482. تارا یسوع کے گھر پر آکر ٹھہر گیا
  483. غزوہ حنین میں کافروں پر خاک پھینکنا
  484. قرآن پاک کی نظیر وہ نہ لا سکے
  485. لن تفعلو ا ۔ تم ایسا نہ کر سکو گے کا دعویٰ اعلانیہ
  486. سات صحابہ ؓ سے تکثیر طعام کی شہادت
  487. دس صحابہ کی تکثیر آب کی گواہی
  488. گیارہ صحابہ کی گواہی کہ محمد ﷺ کے اشارے سے پتھر اور درخت اپنی جگہ سے ہلتے دیکھے
  489. حالات مستقبلہ کی خبری ۔ پیشگوئیاں
  490. محمدﷺ کے بعد آپ کی خلافت قائم ہونے کی خبر
  491. رستوں کے امن اور ڈر کے اٹھ جانے کی خبر
  492. حیرہ سے کعبہ تک کا پر امن سفر
  493. چار غور طلب باتیں
  494. محمد ﷺ نے اپنی فتوحات میں وسعت زمین کی خبر کر دی
  495. دنیا اس پیشگوئی کا مصداق کیسے بھی
  496. عیسیٰ ؑ کے دوبارہ آنے کا عقیدہ
  497. رومیوں کے دوبارہ اقتدار میں آنے کی خبر
  498. صلیبی جنگوں میں اہل فرنگ کی ناکامی
  499. آخر زمانے میں فرنگی پھر عروج پکڑیں گے
  500. عیسیٰ ؑ کے دوبارہ آنے پر قسطنطنیہ فرنگیوں کے پاس ہو گا
  501. ترکوں کے غلبے کی خبر حدیث میں
  502. ضرور ہے کہ حجاز میں آگ بلند ہو
  503. جلانا آگ کے لوازم ذاتی مین سے ہے
  504. ایک درویش کی کرامت کا ذکر
  505. ایک مرد خدا کے پانی پر چلنے کی کرامت
  506. ایک مرد خدا سے کثافت بدنی کا اٹھ جانا
  507. محمد ﷺ کا سایہ دھوپ میں نہ معلوم ہوتا گو ایسا ہونا دائمی نہ تھا
  508. محمد ﷺ سے احیاء میت کا صدور ہوا
  509. معجزات سے دیکھنے والوں کا ایمان لانا ضروری ہے
  510. سولہواں استفسار
  511. ایس اور ایشاہ عبری میں مرداور عورت کو کہتے ہیں
  512. اعلام کے ترجموں سے مضامین بدل جاتے ہیں
  513. بہر کو تیل سے بدلا تو کیا لفظ محمد کو آدمی سے نہ بدلا گیا ہوا گا
  514. لفظ عیسیٰ سالہا سال بعد یسوع سے بدلا گیا
  515. ہو سکتا ہے فارقلیط بھی اسی طرح بدلا گیا ہو
  516. پہلے قنطار کے معنی دس ہزار کے ہوتے رہے
  517. پھر اس کے ساتھ 342 لاکھ کا اضافہ کر دیا گیا
  518. کما مقبولیت کے وقت متروک الٰہی ہونے کا شکوہ عیسوی
  519. تیسری انجیل والا کہتا ہے میں روح کو تیرے سپرد کرتا ہوں
  520. یسوع عبری بولتے تھے نہ کہ یونانی
  521. تین دن رات قبر میں رہنے کی پیشگوئی غلط
  522. خرستس معبود حقیقی اللہ کو کہتے ہیں
  523. مترجمین صرف ترجمہ نہیں تفسیرا الفاظ بڑھاتے رہے
  524. یسوع کا ترجمہ رب اور خداوند نہیں ہے
  525. عیسیٰ کے حق میں پیشگوئیاں
  526. سلیمان کی سلطنت ہمیشہ رہے گی یہ بات غلط نکلی
  527. یرمیاہ کے قول میں جس شخص موعود کی خبر ہے وہ یسوع نہیں
  528. یوشع کی کتاب میں تحریف کی مثال
  529. اموات کو اپنی اولاد کا حال معلوم ہوت اہے
  530. یسعیاہ نبی کا ایک طویل اقتباس
  531. خدا دل شکنی اور عینی راضی شد
  532. عمر ؓ میں اس کا مصداق ظاہر ہوا
  533. عزرا کا لفظ کنواری کے معنی میں نہیں جوان عورت کے معنی میں ہے
  534. اس پیشگوئی کے مریم پر منطبق نہ ہونے کی سات وجوہات
  535. نکاح ہو چکنے کا احتمال موجود ہے اگر نہیں تو قبل نکاح چھوڑنے کا خیال کیوں پیدا ہوا
  536. یوسف کا مریم اور یسوع کو مصر لے جانا
  537. یہودیوں کا دعویٰ کہ ان کا باپ یوسف نجار ہے
  538. یسوع کا نام عمانوئیل نہیں اور جو بچہ کنواری جنے گی اس کا نام عمانوایل ہونا چاہیے
  539. محمد ﷺ کے آنے کی پیشگوئیاں
  540. موسیٰ ؑ سے خطاب کہ میں تجھ سا ایک پیغمبر قائم کروں گا
  541. وہ نبی موعود اسرائیل کی اولاد سے نہیں ان کے بھائیوں سے ہو گا
  542. تیرے دربان سے یہ بعد کا اضافہ ہے قول خداوندی جس کا یہاں حوالہ ہے اس میں یہ الفاظ نہیں
  543. یسوع نے موسیٰ کی خبر تو نقل کی لیکن موسیٰ عن ربہ کے طور پر کوئی بات نہیں کی
  544. بھائیوں سے بنی اسرائیل مراد ہوں تو حضرت کی کوئی خصوصیت نہیں رہے گی
  545. اس نبی کی بات نہ ماننے پر دنیا میں مواخذہ ہو گا
  546. یہ منصب یسوع کے قول کے مطابق محمد ﷺ کا ہے
  547. موسیٰ اور محمد ﷺ کی مماثلتیں
  548. محمد ﷺ کی آمد کی دوسری خبر
  549. داود کی یہ پیشگوئی کسی آنے والے کے بارے میں ہے اور آنے والا حاکمیت کی شان والا ہو گا
  550. زبور کی ایک اور خبر کہ شخص موعود تلوار اٹھائے گا
  551. تسبیح در گلو و شمشیر در دست صحابہ کی خبر
  552. محمد ﷺ کے حق میں چوتھی خبر یسعیاہ نبی کی
  553. دو سوار ایک گدھے پر اور ایک اونٹ پر یہ ایک سچا خواب ہے
  554. بنی قیدار میں آنے والے نبی کی خبر
  555. پادریوں کی تاویل کہ یہاں شاہ فارس مراد ہے
  556. کتاب یسعیاہ میں ایک اور خبر کہ وہ آنے والا قوموں میں عدالت کرے گا
  557. کسی نسخے میں جزائر اور کسی میں امم
  558. نو وجوہ سے اس پیشگوئی کی محمد ﷺ کے حق میں تصدیق
  559. اللہ رب العزت کی کس طرح ثنا خوانی ہو گی
  560. عیسائیوں کا یسوع کے مختارکل ہونے کا عقیدہ
  561. عیسیٰ ؑ کے دوبارہ آنے کا عقیدہ
  562. انجیل میں پائی جانے والی پیشگوئیاں
  563. یوحنا سے سوال کیا تو وہ نبی ہے ؟
  564. انبیاء آئیندہ کے واقعات کی پیشگوئیاں ضرور کرتے ہیں
  565. یسوع کا وعظ کہ آسمان کی بادشاہی قریب ہے
  566. اللہ ہی مختار کل ہے اور اسی کا علم محیط ہے
  567. آسمانی بادشاہت سے کیا مراد ہے
  568. آخری زمانے میں سب ایک مذہب پر آجائیں گے
  569. آسمانی بادشاہت ایک بیج کے درجہ میں ہے
  570. یسوع کی پیش کردہ چار تمثلیں
  571. جسے ناپسند کیا تھا وہی پتھر کونے کا سرا ہو گا
  572. تمثیل کی تاویل و تشریح
  573. بادشاہت چیھین کر دنیا اس سے خود راہ نجات مراد ہے
  574. آخر دنوں میں اس راہ کی تکمیل ہو گی
  575. صرف پھیل جانا آسمانی بادشاہت نہیں ہے
  576. یسوع کے آخری دنوں میں آنے کا عقیدہ
  577. ملکوت السماوات سے موجودہ عیسائیت نہیں اس کے چار گواہ
  578. جو میرے بعد آئے گا اس کا ماننا بھی ضروری ہے
  579. راہ نجات کی آٹھ صفتوں کا بیان
  580. مثلہم فی انجیل میں اسی بادشاہت کی خبر ہے
  581. یہ جو فرمایا وہ پتھر سر زاویہ ہو گیا یہ وہی بات ہے کہ میں عمارت نبوت کا تکملہ ہوں
  582. آپ ﷺ نے اپنے لیے مقام محمود دعا کی تعلیم دی
  583. تورات اور انجیل میں پانچ خرابیاں پیدا کیں
  584. یسوع کا کلام بلفظہ باقی نہ رہنے پایا
  585. لفظ فارقلیط جو ترجمہ تھا اسے آگے ترجمہ کر ڈالا
  586. وہ ترجمہ نہیں کرتے جو محمد ﷺ پر واضح طور پر صادق آئے
  587. لفظ فارقلیط کے ساتھ یعنی سے تفسیر بڑھا دی
  588. شخص موعود کے آثار روح القدس پر پورے نہیں اترتے
  589. تفسیر مفسر کی علی الاطلاق حجت نہیں ہے
  590. فارقلیط کے بارے میں تین غور طلب باتیں
  591. فارقلیط کی صفات روح القدس پر منطبق نہیں ہوتیں
  592. یسوع کے ہوتے ہوئے شاگردوں پر روح القدس اترا تھا
  593. فارقلیط یسوع کے منکروں پر بھی ظاہر ہو گا
  594. فارقلیط حکومت سے عدالتیں قائم کرے گا روح القدس کا حکومت کرنا ثابت نہیں
  595. حواری بھی کہیں حکومت کا منصب نہ پا سکے
  596. فارقلیط پر بنی اسرائیل جھوٹ کا شبہ کریں گے
  597. رسالہ اعمال میں روح القدس کے آنے کا نقشہ
  598. وہ آنے والا حکومت سے دنیا کو الزام دے گا
  599. عیسائیوں ک ارئیس العالم سے شیطان مراد لینا ۔ دنیا کا سردار
  600. فارقلیط کی تفسیر روح القدس سے کرنے کا اضافہ
  601. تثلیث کا انتساب حواریوں کی طرف جھوٹ ہے
  602. فارقلیط سے روح القدس مراد نہ ہونے کے دلائل
  603. رئیس العالم سے شیطان مراد لینے کے چھ حوالے ۔ دنیا کا سردار
  604. شر بھی خدا کی ہی تخلیق ہے
  605. بائبل میں حاکم دنیا کا لفظ کیا کہیں اچھے معنی میں نہیں آیا
  606. رئیس العالم کا لفظ بائبل میں کہیں بھی شیطان کے معنی میں نہیں آیا
  607. حاکم دنیا ہونے کا اطلاق عیسائیوں کے ہاں بھی درست ہے
  608. یسوع کی پیشگوئی میں آنے والے کے لیے بارہ صفتوں کا بیان
  609. بائبل میں کہیں روح القدس کو فارقلیط نہیں کہا
  610. مولوی آل حسن موہانی کی طرف سے مباہلہ کی دعوت
  611. فارقلیط کی دو مشکل التطبیق صفتیں
  612. فارقلیط کی ضمیریں مذکر کی ہیں
  613. وہ تمہارے ساتھ ہے اور تمہارے ساتھ ہو گا
  614. جب تک میں نہ جاوں وہ نہ آئے گا
  615. دوسرے فارقلیط کا حقیقی معنی کیا ہے
  616. حواری یہاں ابد تک نہیں رہے
  617. مدلول حقیقی خطاب وہی پہلا طبقہ ہوتا ہے
  618. بشر کی مخاطب کبھی روح مجرد نہیں ہوتی
  619. ساتھ رہنا کبھی موافقت کے معنی میں ہوتا ہے
  620. کیا فارقلیط اور روح القدس دونوں کے آنے کی بھی پیشگوئی ہو سکتی ہے
  621. فارقلیط کو روح صدق کہنا امر مستبعد نہیں ۔ روح حق
  622. یہ نہ سمجھئے کہ جو بنی اسرائیل میں سے نہیں اس سے تمہیں کوئی تعلق نہ ہوگا
  623. سولہویں اور سترہویں درس عیسائیوں کے مدعا سے زیادہ دور نہیں
  624. ہمارا الحاقیت کا الزام غلط نہیں ہوگا۔ تحریف
  625. سترہواں استفسار
  626. کسی شبہ کے وزنی ہونے کے لوازم
  627. اصول اسلامیہ پر کوئی وزنی شبہ وارد نہیں ہوتا
  628. بداہت عقل کے خلاف نقل کا سہارا غلطی ہے
  629. الوہیت مسیح اور ملعونیت مسیح دونوں عقیدے اصولا ناقابل تسلیم ہیں
  630. ممتنع عقلی کو واجب سمجھے کا الزام
  631. استحسان عقلی مختلف طبقوں کے اختلاف عقول پر خود مختلف فیہ ہو جاتا ہے
  632. میزان اسحاق کے باب اول اور سوم کے جوابات
  633. ہندو پتھروں کو خدا نہیں جانتے
  634. قبلہ عبادت بنانا زبور کی رو سے جائز ہے
  635. فنڈر کی ہندووں سے روایت غلط ہے
  636. قرآن پر تصدیق انجیل کا الزام اور جواب
  637. لنا اعمالنا ولکم اعمالکم کی تفسیر
  638. لا حجۃ بیننا و بینکم کی تفسیر
  639. لا تجادلو اھل الکتاب کی تفسیر
  640. قولو امنا بالذی انزل الینا و انزل الیکم کی تفسیر
  641. وھم یتلون الکتاب کی تفسیر
  642. ابراہیمی وحی پر ایمان لانے کا اقرار
  643. ابراھیم ، اسماعیل ، اسحاق اور یعقوب پر اتری وحی کہیں کتابی شکل میں نہیں ہے
  644. دلائل وافیہ کی پیش کردہ دو آیتیں
  645. ان میں پوری کتاب کے موجود ہونے کا اقرار نہیں
  646. قرآن میں نسخ کی بحث
  647. کائنات کے دائروں میں تقلیبات
  648. ہندووں کا تمام مصالح پر مطلع ہونا ضروری نہیں
  649. کتنے جانور موسیٰ ؑ کے بعد حرام ہوئے
  650. سور بھی حرام قرار پایا
  651. یعقوب کے وقت جمع بین الاختتین ۔ دو بہنوں سے نکاح جائز
  652. تورات میں جمع بین الاختتین ناجائز ہے ۔ دو بہنون سے نکاح
  653. ہر جانور کا ایک ایک جوڑا یا سات سات ۔ نسخ یا تعارض
  654. آدم کی اولاد میں بہن بھائی کا نکاھ
  655. شریعت موسوی میں بہن بھائی کا نکاح حرام
  656. عہد نامہ قدیم میں آئندہ کسی وقت عہد جدید باندنے کی خبرہے ؟
  657. پولوس نے یسوع کے حوالے سے احکام تورات کے بیکار ہونے کا اعلا ن کیا
  658. یسوع کے آنے سے شریعت منسوخ ہوئی
  659. عہد قدیم پر اگر کہیں جرح نہ ہوتی تو عہد جدید نہ دیا جاتا
  660. پولوس نامہ میں لفظ منسوخ موجود ہے
  661. مطلقہ عورت سے نکاح کرنا پہلے جائز تھا انجیل میں ناجائز ہو گیا
  662. احکام صرف یسوع کے آنے تک کے لیے تھے
  663. بدنی ختنے کا حکم یسوع کے آنے سے منسوخ ہوا
  664. پادری فنڈر کا منسوخی احکام کا اقرار
  665. احکام کے مقاصد میں ہمیشہ سے اتفاق رہا ہے
  666. پادریوں کی مہمل تاویلیں
  667. تورات میں جانوروں کی قربانی کا حکم یہ اصل قربانی نہیں
  668. یہ بات تورات کی تفسیر نہیں تغییر ہے
  669. یسوع نے جو احکام تورات منسوخ کیے
  670. محرف کتابوں سے اپنے دعویٰ پر دلیل لانا
  671. ظاہری احکام کو باطنی سے بدلنے کی تاویل
  672. پادریوں کی یہ تاویل درست نہیں
  673. پہلے کی بات پوری ہو جائے اور وہ عمل باقی نہ رہے تو یہ بھی ایک انداز نسخ ہے
  674. عیسائیوں کا عقیدہ کہ عہد جدید میں لوگ باطبع باپ کے مطیع و منقاد ہوں گے
  675. یسعیاہ کی کتاب میں احکام ظاہری کی باطنی سے تبدیلی کا کوئی ذکر نہیں
  676. زبور میں کہیں شریعت جدیدہ کا وعدہ نہیں
  677. پرانے عہد نامہ کی شریعت محمد ی ﷺ سے تبدیلی کو بھی مجاز و حقیقت کی تبدیلی سمجھ لو
  678. ابطال اور نسخ میں فرق ہے
  679. نسخ ختم میعاد ظاہر کر دینے کا نام ہے
  680. پادری لفظ نسخ سے کیا مغالطہ دیتے ہیں
  681. بائبل میں خدا کی اپنے بعض کاموں پر ندامت کا اظہار
  682. انسان کو زمین پر بھیجنے کی پشیمانی
  683. یعقوب ؑ سے کشتی لڑنے کا قصہ
  684. اسحاق کی عیص کے حق میں دعا کو خدا نے یعقوب کے حق میں سمجھ لیا
  685. خدا کی طرف احمقانہ کام کی نسبت
  686. خدا کا مریم کے پیٹ میں جنین بن کر رہنا
  687. خدا کا تین دن دوزخ میں رہنا
  688. مسلمانوں کا اعتقاد دربارہ تورات و انجیل
  689. تورات و انجیل کی حیثیت اس حدیث کی طرح ہے جس میں کلام بشر شامل ہو
  690. بائبل میں تحریف کے چار دور
  691. موسیٰ سے عہد فترت تک
  692. یسوع سے تاآخر عہد حواریاں
  693. یسوع کے بعد محمد ﷺ تک
  694. محمد ﷺ کے ظہور سے اب تک
  695. بائبل میں انسانی کلام کی مختلف صورتیں
  696. تحریری خرابیوں کی آٹھ وجوہات
  697. بائبل میں کلام الٰہی سے کلام انبیاء مخلوط ہے
  698. بائبل کی عیسائیوں کے پاس کوئی سند نہیں
  699. تحریف بائبل پر بارہ دلیلیں
  700. پادری صاحب کی دلیل بطلان کے پانچ وجوہ
  701. اہل کتاب کب گمراہ ہوئے تھے ؟
  702. کسی تحریر کا پرانا ہونا اس کی صحت کو مستلزم نہیں
  703. مستور الحال لوگوں کی رویت کا اعتبار نہیں
  704. اوقات تحریف کی نشاندہی ابھی تک مسلمانوں کے ذمہ قرض ہے
  705. یسوع کے ذمہ آنے والا قرض
  706. قرآن کے متعلق اہل تشیع کا اختلاف
  707. معجزہ پہچاننے کی قابلیت اور استعداد
  708. یسوع کے وقت میں بھی ایک شخص دم سے جن بھوت نکالتا تھا
  709. سحر اور معجزہ میں مابہ الامتیاز ۔ فرق
  710. پادریوں کے دلائل کہ قراان کلام خدا نہیں
  711. قرآنی عقائد میں روح انسانی کی تکمیل
  712. قرآن کریم کی تعلیمات طب اخلاق ہیں
  713. قرآن کریم میں افعال جوارح کا بیان
  714. پادری فنڈر کی محمد ﷺ کے ارتکاب ذنوب کی بحث اور آیات
  715. عیسائی عقیدہ کہ ہر بخشش کے لیے شافع ضروری ہے
  716. شفاعت کے لیے شفاعت کنندہ کے خود گناہ سے پاک ہونے پر کوئی برہان نہیں
  717. دعویٰ بشریت میں محمد ﷺ اور یسوع برابر ہیں
  718. کوئی گناہگار محتاج شفاعت کا نہیں
  719. سہو اور نسیان عقلا گناہ نہیں
  720. گناہ میں قباحت اس پر عتاب آنے کی وجہ سے ہے
  721. جب عیسائیوں کے ہاں نبوت کے لیے پاکیزگی لازم نہیں تو اعتراض فضول ہے
  722. مغفرت کے معنی کہ گناہ مرتبہ امکان میں چھپا رہے
  723. یسوع شیطان کے کہنے میں لگے رہے ؟
  724. یسوع ماں کے بلانے پر نہ گئے
  725. یسوع کا دنیا کی تنگی کی شکایت کرنا
  726. شہادت کے وقت اپنے بارے مین متروک الٰہی کہنا
  727. بہشت میں حور و غلمان کے ہونے پر اعتراض
  728. عیسائیوں کے جہاد اور تقدیر پر اعتراضات
  729. فنڈر کا مرتدین کے بارے میں قرآن پاک پر جھوٹ باندھنا
  730. فنڈر کی قرآن دانی کی ایک کھلی مثال
  731. اجرائے احکام تشریعی اور امفہائے امور تکوینی میں عقلا ٹکراو نہیں
  732. یسوع کے بشر ہونے کے موضوع پر پادری فنڈر کا قرآن پر جھوٹ
  733. جو چیز بلا سبب ظہور میں آئے وہ براہ راست خدا کی طرف سے ہے نہ کہ خدا
  734. روح کا لفظ یسوع اور آدم دونوں کے لیے
  735. یسوع کی اپنے وجود عنصری پر شہادت
  736. واقعہ صلیب کے بعد یسوع کا کھانا پینا
  737. کھانا پینا بطلان الوہیت پر ناطق ہے
  738. انجیل سے سرقہ کا الزام اور جواب ۔ النصوص تحمل علی ظواھرھا
  739. نبوت محمدیہ کی صفات پر بحث ۔ معجزہ نہ دکھانے کا الزام
  740. فنڈر کی شق القمر کی تفسیر
  741. تفسیر کبیر سے اپنے موقف پر شہادت ۔ ڈاکٹر ٹیٹلہ کا نہایت اہم بیان
  742. یوشع کے لیے سورج کا ٹھہرنا
  743. یہ الزام کہ قرآن میں کوئی پیشگوئی نہیں ہے
  744. متبنی کی علامت کہ اس کی پیشگوئی جھوٹی نکلے
  745. ضروری ہے کہ نبی کی کوئی بات ممتنع نہ ہو
  746. بائبل کی جھوٹی پیشگوئیاں
  747. فنڈر کا اعتراض کہ ناقلان حدیث بیشتر آپ ﷺ کے اقرباء تھے پس معتبر نہیں
  748. محمد ﷺ کی فضیلت تمام انبیاء پر
  749. اس امت میں بہت اہل کرامات گزرے ہیں
  750. ووجدک ضالا کا اعتراض اور جواب
  751. ما کنت تدری مالکتاب ولاالایمان میں شرک کا ابہام کہیں نہیں
  752. مسیحی روایات میں اختلاف شیعہ اور سنی روایات کے اختلاف سے زیادہ ہے
  753. ملحدین کے مقابل مومنین کی ذمہ داری زیادہ ہے
  754. کیا احادیث سے عقائد میں سند پکڑی جا سکتی ہے
  755. تورات اور انجیل میں مضحکہ خیز تطبیق
  756. تورات کی رو سے مشرک واجب القتل ہے
  757. یسوع کی مفروضہ پیشگوئیاں مندرجہ اناجیل جو غلط نکلیں
  758. جمع بین الاختین شریعت یعقوبیہ میں جائز تھا۔ دو بہنوں سے نکاح
  759. توریت کی رو سے باندی سے خلوت کی اجازت
  760. توریت کی رو سے زیادہ عورتیں رکھنا
  761. خدا کے بیٹوں کی عورتوں سے رغبت کرنا
  762. یعقوب نے صرف ایک عورت کی محبت میں اپنے سسر کی سات سال خدمت کی
  763. سلیمان کے خدا کا بیٹا ہونے کا دعویٰ
  764. اسرائیل کی سلطنت کے بارے میں توریت کیپیشگوئی غلط نکلی
  765. سلیمان کی والدہ اوریا کی سابقہ بیوی تھی ۔ جس سے داود نے زنا کیا
  766. سلیمان کی یسوع پر فضیلت
  767. سلیمان کی سات سو بیویاں
  768. ابراہیم کی تین سو بیویاں
  769. یعقوب کے ہاں چار عورتیں
  770. موسیٰ کے ہاں ایک منکوحہ اور ایک باندی
  771. سارہ ابراھیم کی علاتی بہن تھی
  772. یسوع کے کردار پر اگر کوئی خبیث انگلی اٹھائے
  773. یسوع پر مخالفوں کا شرابی ہونے کا الزام
  774. دین میں نئی بات نکالنا عام مرض رہا ہے
  775. عیسائی مذہب کے فروغ عام کی وجوہات
  776. استدلال میں ملحدانہ تقریر صرف الزاما لکھی ہے
  777. مسئلہ جہاد
  778. کسی حکم اجماعی اور تواتر کا انکار کفر ہے
  779. جہاد کا استحسان عقلی اور اس کے مختلف مقدمات
  780. وہ آیات جو آیات جہاد کے بظاہر معارض ہیں
  781. قتل مرتد کا استحسان عقلی ؟
  782. لست علیھم بمصیطر کی تشریح
  783. و ماعلی الرسول الا البلاغ کی تشریح
  784. ہندووں کے ہاں جہاد کاعمل
  785. ملت موسویہ میں جہاد اور غنیمت اور باندیوں کا ثبوت
  786. ملت اسلامیہ میں بچوں کو مارنے کا حکم نہیں
  787. تورات کا حکم کہ تم ان کی عبادت گاہوں کو بھی برباد کر دو
  788. غیر الٰہی پرستش پر رجم کرنے کا حکم
  789. داود کی لڑائیاں نیکی کے لیے تھیں
  790. جہاد میں قتل کافروں پر غضب الٰہی ہے
  791. کافر حربی عاجزی کرے اسے نہ ماریں گے
  792. تورات میں غلاموں لونڈیوں اور جزیہ کا تصور
  793. پیغمبروں کے مقاتلات میں دعوت اور طلب اطاعت کا مضمون شامل ہوتا ہے
  794. پیغمبروں کے مقاتلات بد اعمالی کے باعث نہیں ہوتے
  795. ایک فاحشہ عورت قتل کے حکم سے مستثنیٰ
  796. پیغمبروں کے مقاتلات آسمانی عذاب کے نہٰں
  797. قتل در جہاد اور آسمانی جہاد میں فرق
  798. توریت کی مدد سے نذر لغیر اللہ کا مرتکب مرتد ہے اور سزا قتل ہے
  799. یہ الزام کہ اسلام تلوار کے زور سے پھیلا
  800. فرنگستان میں مسیحی دین تلوار کے زور سے پھیلا
  801. موسیٰ اور یشوع نے کنعانیوں کے خلاف تلوار اٹھائی
  802. اکبر بادشاہ بری صحبت سے ملحد ہوا تھا
  803. قیود کا سقوط موجب اشاعت عام
  804. مسیحی قوموں کو قواعد عبادت وضع کرنے میں مختار چھوڑا گیا
  805. تزئین نسواں سے عیسائی مذہب میں ترقی
  806. تنگی معاش بھی ایسے حالات پیدا کر دیتی ہے
  807. کافروں کا مال عاریۃ لے کر بھاگ جانا اسلام میں جائز نہیں تورات میں جائز ہے
  808. یسوع کا جمادات پر خفا ہونا
  809. یسوع کا پطرس کو شیطان ٹھہرانا
  810. انجیلوں کے موجب فخر سبق
  811. دشمن سے انتقام نہ لینا چاہیے
  812. یہ امر وجوبی ہے تو اس سے تورات باطل ہوئی
  813. سیاست باعث ناخہ شنودی حق ہے
  814. انجیل سے بدلی لینے کی اجازت بھی نکلتی ہے
  815. اگر امر وجوبی نہیں تو عفو کی تعلیم تو قرآن بھی دیتا ہے
  816. بائبل کی استحسان عقلی کے خلاف باتیں
  817. خدا تخلیق بنی آدم سے بہت نادم ہوا
  818. خدا نے یعقوب سے کشتی لڑی
  819. خدا یعقوب کی باتوں میں آگیا
  820. ہارون سے بت پرستی کا صدور
  821. خدا بدلیوں کے مرکب میں آیا
  822. خدا نے پہلوان نے خوردہ کی طرح جنگ کی
  823. خدا نو مہنے مریم کے پیٹ میں رہا
  824. خدا یحییٰ پیغمبر کا مرید ہوا
  825. خدا کی موسیٰ کو دغا بازی کی تلقین
  826. یوحنا سے زیادہ بزرگ کوئی نہیں
  827. آسمانی بادشاہت میں ہر ایک یحییٰ سے بڑا ہے
  828. کیا یوحنا آسمانی بادشاہت میں نہ جائے گا
  829. آسمان کی بادشاہی پر جبری تسلط
  830. ملاپ کرانے نہیں لڑانے آیا ہوں ۔ یسوع
  831. روح کا مقر جہاں سے وہ رخصت ہوئی
  832. روح بالاتفاق غیر جسمانی ہے
  833. یسوع دیووں کو دفع نہ کرتے تھے
  834. ہابیل سے زکریا تک سب خون تمہارے ذمے
  835. بدکاروں کا بدلہ ان کی چوتھی نسل تک
  836. یسوع کے خدائی دعوے کے الفاظ
  837. سارے عالم کے اختیارات کا دعویٰ تثلیث سے جوڑ نہیں کھاتا کیونکہ باپ خالی ہو بیٹھا ہے
  838. یسوع نے اپنے شاگردوں کو خدا بنا دیا اور جو بزرگی خدا سے لی تھی انہیں دے دی
  839. پھر پطرس کو شیطان بھی کہا
  840. یسوع نے اکرام والدہ نہ کیا
  841. ایک دکھی کو جھڑک دیا اور گالی دی
  842. اس زمانہ کے کچھ لوگ قیات تک رہیں گے
  843. تم بارہ تختوں پر بیٹھو گے ۔ پیشگوئی
  844. نجات کی راہ سخت اور دشوار ہے
  845. رسالہ تحقیق دین کا جواب۔ پہلے اور چوتھے باب کا جواب
  846. خدا تعالیٰ کی صفات پر بحث۔ مسئلہ تقدیر اور اس کے پہلو
  847. انسان کے اعمال بمشیت الٰہی۔ مسلمانوں کا عقیدہ تقدیر الٰہی پر
  848. جو کچھ عالم ظہور میں آئے گا وہ اور اس کے جملہ لوازم سب اللہ کے علم میں ہیں
  849. معلوم باری کا ظہور اللہ کی مشیت کے تحت ہے
  850. یسوع کو سولی چڑھانے والوں میں اس ادراک کی تخلیق کرنے والا کون تھا ؟
  851. عیسائیوں کو تفصیلی الزامی جواب
  852. فرعون کے دل میں سختی پیدا کرنے والا کون تھا ؟
  853. فرعون کو دل کی سختی پر عزاب دینے والا کون تھا ؟
  854. یسعیاہ کی کتاب میں یہ حکم تکوینی ہے یا تشریعی
  855. انکی آنکھیں بند رہیں مبادا وہ توبہ کر لیں
  856. اگر تشریعی تھا تو شیطنت اور شریعت ایک چیز اگر تکوینی تھا تو کیا یہ بے رحمی نہیں ؟
  857. تورات کی رو سے شر بھی خدا ہی کی تخلیق ہے
  858. ہدایت دینے میں خدا کی اپنی تقسیم
  859. رضا مندی کے دو معنی خوشنودی اور مشیت
  860. ہدایت خدا کے قبضے میں یہاں رضا مندی مشیت اور خواہش ہے نہ کہ خوشنودی
  861. مشیت خداوندی اور مشیت عیسوی
  862. یسوع کی شب شہادت کی دعا
  863. یسوع کی زبان پر تقدیر کا لفظ
  864. تقدیر کے معنی جیسا اس کے واسطے مقرر کیا گیا ہے
  865. خدا شریر کو شرارت سے منع تو کرتا ہے
  866. لیکن اپنی قدرت سے اسے اس سے باز نہیں رکھتا
  867. قرآن کریم پر پادریوں کے اعتراضات
  868. آدم کو سجدہ بت پرستی کی تعلیم تھی
  869. سجدہ تعظیمی اور سجدہ عبادت میں فرق
  870. برادران یوسف نے آپ کو سجدہ کیا
  871. عورتیں کھیتیاں ہیں اس کی غلط تفسیر
  872. شیعوں کے غلط معنی سے قرآن پر اعتراض
  873. رومن کیتھولک عقیدے میں فوت شدہ حاملہ کا بچہ بھی لائق بپتسمہ ہے
  874. متبنی کی مطلقہ سے نکاح جائز ہے
  875. بعض احادیث پر اعتراضات اور ان کے جوابات
  876. خداتعالیٰ کی تکوینی اورتشریعی حکمتیں
  877. گنہگار کی بخشش خلاف عدل نہیں
  878. ہو سکتا ہے حسنات اس گناہ پر غالب آجائیں
  879. باپ دادوں کا بدلہ اولاد سے لینا خلاف عدل ہے
  880. یتیموں پر بددعا خلاف عدل ہے زبور میں اس کی تعلیم کیوں ؟
  881. اولاد سے بدلہ چارپشت تک یا آگے بھی ؟
  882. زبور کی رو سے کوئی ابدی عذاب میں نہ رہے گا
  883. مرقس کے بیان کے مطابق عذاب ابدی ہے
  884. انجیل لوقا میں ہے یسوع سے پیار کرنے والی فاحشہ کے سب گناہ معاف ہوئے
  885. مسجد اقصیٰ پر پادریوں کی بحث
  886. مجدیت نام ہے زمین کے علو و سفل کا
  887. عمر ؓ کی قبر یروشیلم میں ہے ؟
  888. پادریوں کا اعتراض کہ حضور ﷺ کو عیسیٰ کے مقتول ہونے کی خبر نہ تھی
  889. قرآن سے پادریوں کے اس دعویٰ کی تردید
  890. انجیل میں کئی تاویلات کے نمونے
  891. میں ملاپ کروانے نہیں آیا یہ بات بظاہر مفسرین کی سی ہے
  892. جو میرا گوشت کھاتا ہے ہمیشہ کی زندگی پاتا ہے
  893. اس بیان میں بطلان تثلیث کا اشارہ
  894. عبادت گاہ سے یسوع کی مراد
  895. درمنثور کی روایت میں یسوع کا فدیہ
  896. قبر سے مطلق دنیا بھی مراد ہو سکتی ہے
  897. اس کے قبر سے جی اٹھنے پر شاگردوں کو یاد آیا کہ اس نے ایسا کہا تھا
  898. شیعوں کے تقیہ کا ایہام
  899. میرا آسمان پر جانا بے مثل ہے یعنی بہ ہمیں بدن عنصری بلا حیلولت موت
  900. یسوع بذات خاص مصلوب نہیں ہوا
  901. داود نے صالحین امت کو خدا کہا ہے
  902. موسیٰ کے لائے احکام میں کوئی جملہ مخلاف قرآن نہیں بجز لفظ حکم ابدی کے
  903. انجیل میں بھی کوئی بات بجز یسوع کے مصلوب ہونے کے خلاف قرآن نہیں ہے
  904. واقعہ قتل و صلب کی ایک بعید تاویل
  905. قبطین میں پانچ وقت نماز کس طرح پڑھیں
  906. قبطین میں دن بھر روزی کس طرح رکھیں
  907. احکام تعبدیہ اور ان کی مختلف انواع
  908. تم قبطین میں سبت کس طرح کرو گے ؟
  909. تورات میں اس کے حل کی کوئی تجویز نہیں
  910. زچگی میں عورت سات دن ناپاک رہے ۔ وہ حوالی قطب میں کیا کرے
  911. برص کا علاج اس کے کپڑے پھاڑیں اور وہ چلا چلا کے کیسے ناپک ناپاک
  912. قبطین میں ایسے مرض کا علاج کیسے ؟
  913. اگر وہ گونگا ہو تو کیسے چلائے ؟
  914. کاہن گر کو سات روز بند رکھے ۔ یہ دن قطبین میں کتنے بڑے ہوں گے ؟
  915. جہاں چڑیاں نہ اڑیں وہاں کیا کرے ؟
  916. احتلام والا سات دن بعد پاک ہو گا
  917. انزال والا شام تک ناپاک رہے گا۔
  918. زوال اور غروب کے درمیان عید فسح
  919. غلام خریدنا اور اسے چھ سال بعد آزاد کرنا اس کا ثبوت تورات سے
  920. بنی اسرائیل کا صندوق شہادت کہاں ہے ؟
  921. بیل کو پتھراو سے مارنے کے بے معنی حکم
  922. روزے کا تصور انجیل میں موجود ہے ۔ یہ حوالی قبطین میں کیسے رکھا جائے
  923. قصہ ذو القرنین پر اعتراض
  924. بائبل کے جملے جو بظاہر سائنس اور ریاضی کے خلاف ہیں
  925. وہ زمین جہاں دودھ اور شہد موج مارتا ہے
  926. اے وہ بستی جو آسمان تک بلند ہوئی ہے
  927. دکن کی رانی اقصائے زمین سے آئی حالانکہ گول چیز کا کوئی کنارہ نہیں ہوتا
  928. آسمان گول ہے اس کا کوئی کنارہ نہیں
  929. کوئی دن اچھے لوگون کے لیے چھوٹا نہیں ہو جاتا
  930. تارے آدمی کی رفتار پر نہیں چلتے
  931. ایک عورت آفتاب کو اوڑھے ہوئی تھی
  932. دوپہر کے وقت چاند کہاں نظر آتا ہے
  933. آسمان کے ناپدید ہونے کی پیشگوئی
  934. خدا کے بالا خانے کی کڑیاں
  935. آسمان معدوم ہے یا مصنوع
  936. دن اور رات تن دار چیزیں نہیں
  937. آفتاب کا آسمان پر خیمہ کہاں ہے ؟
  938. دن کی درازی پیمائش سے نہیں جاتی
  939. زمین حرکت نہیں کرتی ساکن ہے
  940. پانی زمین پر یا زمین پانی پر
  941. آسمانوں پر بھی ازروئے زبور پانی ہے
  942. آسمانوں پر بھی ازروئے زبور پانی ہے
  943. خدا نے آدمی کو اپنی صورت پر پیدا کیا
  944. مذکورہ درسوں پر عقلی اور طبعی اعتراضات
  945. بدو آفرینش سے اب تک چھ ہزار سال
  946. تحویل قبلہ اور مسئلہ نسخ پر اعتراض
  947. یہ بات نہیں کہ خدا کعبہ میں رہتا ہے
  948. زبور میں ہے خدا بیت المقدس میں ہے
  949. قیامت کا دن ہزار سال کا یا پچاس ہزار سال کا یا نگاہ کی ایک لپک یا اس سے قریب تر
  950. اعتراض دربارہ سورج گرہن اور چاند گرہن
  951. بر وقت شہادت یسوع سورج تاریک ہو گیا
  952. شہاب ثاقب پر بحث
  953. کیا بنو اسرائیل دربارہ مصر میں گئے تھے ؟
  954. واورثناھا بنی اسرائیل کی تفسیر
  955. تورات میں ہے موسیٰ نے کئی بادشاہوں کو قتل کیا
  956. عزیر کو یہودی خدا کا بیٹا نہیں مانتے
  957. سب لوگ یوحنا کو نبی مانتے تھے صحیح نہیں
  958. موسیٰ پر ایمان لانے کو یسوع پر ایمان لانے کا مستلزم ٹھہرانا
  959. یہواہ کی نگاہ کے اثر سے چھنال بننا
  960. یہ اقرار کہ عیسائی واقعی یسوع کی عبادت کرتے ہیں
  961. قرآن پر اعتراض کہ اس کی رو سے جھوٹ بولنا روا ہے
  962. یسوع کا غیر واقعی بیان
  963. قرآن مجید کے معجز اور ابلغ ہونے کی بحث
  964. امامیہ مذہب والوں کی سورۃ النورین
  965. سورۃ النورین کے مقبلہ میں سورۃ النفاق
  966. معجزات ملتبس بہ سحرو تبخیم و رمل
  967. قرآن کی بلغیت غیر عربی داونں کے لیے ملتبس
  968. عرب عربا اعجاز قرآنی کا معارضہ نہ کر سکے
  969. قرآن کریم کے بیس مضامین جو ہر رکوع میں ہیں
  970. تیرے اختیار میں کوئی معجزہ ہو تو دکھلا
  971. تیرے اختیار میں کوئی معجزہ ہو تو دکھلا
  972. انماالایات عندا للہ کی تفسیر
  973. یسوع کا معجزہ دکھانے سے انکار
  974. ھل کنت الا بشر ا رسولا کی تشریح
  975. و ما منعنا ان نرسل بالایات کی بحث
  976. پادری کے قرآن پر جھوٹ
  977. آدم کا قد ساٹھ گز لمبا تھا
  978. موسیٰ اسی سال ایک نبی کی تلاش میں رہا
  979. داود اور سلیمان نے شیطان سے مدد لی
  980. یسوع نے یہودیوں کو بند بنا دیا
  981. سلیمان ہیکل کی تیاری سے پہلے فوت ہوئے
  982. یوحنا کے عجیب و غریب مشاہدات
  983. پادریوں کی قرآن اور صاحب قرآن کی بے ادبی کے الزامی جوابات
  984. یسوع کی پیشگوئی کہ ان کی بادشاہت کے لوگ اندھیروں میں ڈالے جائیں گے
  985. در نجات تنگ ہے اس میں کم لوگ اور دروازہ ہلاکت میں زیادہ لوگ داخل ہوں گے
  986. تا حیات یسوع صرف سوا سو آدمی مسلمان
  987. مسیح موعود کا انتظار اور ان کی نبوت کے آثار
  988. محمد ﷺ کی انقلابی دعوت اور مشکلات
  989. جاہلی عقیدہ کہ ابراھیم میں آثار بشری نہ تھے
  990. محمد ﷺ سے پھیلنے والا خیر اور علم
  991. اٹھارہواں استفسار
  992. ملت محمدیہ ﷺ میں پائی جانے والی خوبیاں
  993. بے داغ اور واضح توحید
  994. کون ممکن الوجود عالم میں تصرف کرنے میں مفوض بالاستقلال نہیں ہے
  995. اسلام کے عقیدہ توحید کا پورے عالم میں پھیلاو
  996. یہ سب پھیلاو محمد رسول اللہ ﷺ والذین معہ سے ہوا
  997. عقیدہ توحید میں مجوسیوں کا موقف
  998. عقیدہ توحید میں براہنہ ہند کا موقف
  999. عقیدہ توحید میں ملت موسوی کی تاریخ
  1000. عقیدہ توحید میں عیسائیوں کا تصور
  1001. عقیدہ توحید میں چینیوں کی پچ
  1002. دینی تعلیمات کا محمد ﷺ سے متصلا منقول ہونا
  1003. کمال محبت الٰہی کے تین موقوف علیہ امور ۔ سچے اعتقاد ، اخلاق حمیدہ ، ریاضات لائقہ
  1004. امور ثلاثہ مذکورہ اور ملتوں میں کامل اور واضح نہیں
  1005. بتاو موسیٰ و ہارون کس طرح عبادت کرتے تھے ؟
  1006. اپنے نبی سے تشبہ فی العبادت صرف ملت اسلام والوں کو ہے
  1007. قرآن جن صفتوں سے محمد ﷺ سے منقول ہے کوئی آسمانی کتاب ان صفتوں سے منقول نہیں
  1008. پہلی صفت یہ کہ یہ ایک زندہ زبان میں ہے
  1009. دوسری صفت یہ کہ جس پر اترا وہ ایک انسان ہے
  1010. تیسری صفت مہبط وحی اسے بالفاظہ کلام الٰہی کہتا ہو
  1011. چوتھی صفت ۔ صاحب رسالت امور باطلہ سے معصوم ہو
  1012. پانچویں صفت۔ مہبط وحی کا اپنا کلام اس میں شامل نہ ہو
  1013. چھٹی صفت۔ شروع سے پورے ماننے والوں میں پھیلا ہو
  1014. ساتویں صفت کلام اجزا کے ناموں سے شہرت پا چکا ہو
  1015. آٹھویں صفت۔ اس کے لکھنے والوں نے خود اسے مہبط وحی سے سنا ہو
  1016. نویں صفت لکھنے والے دو تین نہیں بہت زیادہ ہوں
  1017. دسویں صفت۔ وہ لکھنے والے اس کلام کی تلاوت و تدریس انہی الفاظ اور اوصال و فواصل کی تععین سے کرتے ہوں
  1018. گیارہویں صفت۔ اس کلام کو جمع کرنے والوں کے دشمن بھی اس کلام کو منظور و مقبول رکھتے ہوں
  1019. بارہویں صفت۔ اس کلام کا کوئی متوازی نسخہ پاس نہ ہو
  1020. تیرہویں صفت۔ وہ کلام علاوہ تحریر کے سینہ حفاظ میں محفوط ہو
  1021. چودہویں صفت۔ کوئی غیر بھی اسے کلام نبوت کے درجہ میں نہ لاسکے
  1022. پندرہویں صفت۔ اس میں کوئی کمی بیشی دخل و تصرف خلق سے نہ ہو سکے
  1023. سولہویں صفت اس کے مضامین عقائد و اخلاق اور اعمال و معاملات میں عقلا مستحسن اور روحانیت سے پر ہوں
  1024. یسوع مرشد عالم دوسری بار سب کے لیے آئیں گے
  1025. حصول محبت الٰہیہ محمدﷺ کی تکذیب کے تصور سے احتراز کرتے ہوئے